بلدیات کے بغیر جمہوریت کی تکمیل نہیں ہوسکتی:سلمان پرویز

انٹرنیشنل ہیومن رائٹس موومنٹ کے سابقہ مرکزی سینئر نائب صدر سلمان پرویز نے کہا ہے کہ بلدیات کے بغیر جمہوریت کی تکمیل نہیں ہوسکتی۔صوبائی حکومت 12ستمبر کوہونیوالے بلدیاتی انتخابات کی شفافیت یقینی بنائے۔امیدوار اوران کے حامی تصادم سے گریز کریں ، ہماری سیاست
جنازوں کی متحمل نہیں ہوسکتی ۔پارٹیوں کے نامزد اورآزاد بلدیاتی امیدوارانتخابی ضابطہ اخلاق اوراخلاقیات کی پاسداری کریں ۔اپنے ایک بیان میں سلمان پرویزنے مزید کہا کہ حکمران اپنے انتخابی وعدے وفاکرنے میں ناکام رہے ۔نام نہاد منتخب حکمران تین سال تک نظام بلدیات سے اس قدر ڈرتے کیوں رہے ، انہیں جمہوریت کی تکمیل سے خطرہ کیوں محسوس ہوتا تھا۔اختیارات کی نچلی سطح پرمنتقلی تک عام آدمی کو مقامی مسائل کے بوجھ سے نجات نہیں ملے گی۔انہوں نے کہا کہ بلدیاتی ادارے فعال نہ ہونے سے محروم طبقات مزید بدحال ہو ئے، مقامی نمائندے منتخب کرناان کا بنیادی جمہوری حق ہے ۔ مہنگائی کے مارے اورانصاف سے محروم عوام دوہائی دے رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ تبدیلی سرکار کے سرخیل عمران خان اپنے پیشرووزرائے اعظم کی طرح ہرپندرہ دن بعد پاکستانیوں پرپٹرول بم گرارہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ 2018ءکے انتخابات میں ووٹ سے چہرے ضرور تبدیل ہوئے لیکن جس تبدیلی کامژداسنایاجارہا تھا وہ ابھی تک نہیں آئے لہٰذاءحکمرانوں کوبیانات اوراقدامات کودیکھتے ہوئے،”ہنوز تبدیلی دوراست” کہنا بیجا نہیںہوگا۔ملک میں ایک طرف بیروزگاری اورتوانائی بحران زوروں پر ہے جبکہ دوسری طرف مہنگائی کاآدم خوربھوت عوام کوزندہ نگل رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ ہنرمندافراد بھی روزگار سے محروم ہیں ،عمران خان حکومت کی بجائے اپوزیشن کے ساتھ سیاست کررہے ہیں۔ مختلف طبقات کی طرف سے بار باراحتجاج کے باوجودنااہل حکمران اپنی ناقص ترجیحات تبدیل اوردرست کرنے کیلئے تیار نہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں