لاہور میں رکشہ سوار خاندان سے بدتمیزی کا مقدمہ موٹرسائیکل سواروں کیخلاف درج

پولیس نے گریٹراقبال پارک کیقریب رکشہ سوارخاندان سے بدتمیزی کا مقدمہ 10سے12موٹرسائیکل سواروں کیخلاف درج کرلیا اور پارک کیگردونواح میں لگیسیف سٹی کیمروں کاریکارڈحاصل کرلی ہے۔تفصیلات کے مطابق لاہور میں گریٹراقبال پارک کیقریب رکشہ سوارخاندان سے بدتمیزی کا مقدمہ تھانہ لاری اڈہ میں 10 سے 12موٹر سائیکل سواروں کے خلاف درج کرلیا گیا ، پولیس نے پارک کے گردو نواح میں لگے سیف سٹی کیمروں کا ریکارڈ حاصل کرلی ہے۔مقدمے میں کہا گیا کہ دولڑکیاں اور ایک بچی چنگ چی رکشے کی عقبی نشست پر بیٹھی تھیں کہ سرکلر روڈ گریٹر اقبال پارک کے نزدیک سے گزرتے ہوئے 10سے 12 اوباش لڑکوں نے رکشوں کا پیچھا کیا اور رکشے میں بیٹھی لڑکیوں پر آوازیں کستے رہے۔یاد رہے جشن آزادی کے روز رکشے میں موجود خواتین کے ساتھ بدسلوکی کی ایک اور ویڈیو منظرعام پر ا?ئی تھی ، جس میں اوباش نوجوان رکشے میں سوار خواتین کو ہراساں کرتے رہے۔ویڈیو میں دیکھا جاسکتا تھا کہ اوباش نوجوانوں نے خواتین کو ہراساں کیا اور پیچھا کرتے رہے، اوباش نوجوان موٹر سائیکل سے اتر کر رکشے میں سوار ہوگیا اور خاتون کے ساتھ بدسلوکی کی جبکہ رکشے میں سوار خواتین نے خود کو بچانے کے لیے جوتا اٹھا لیا، خواتین کے ساتھ رکشے میں بچہ بھی سوار تھا

اپنا تبصرہ بھیجیں